Ads are placed to support costs of domain and hosting. All Ads are random and are not chosen by Nohay Lyrics: Sorry for any inappropriate ads.

  • Home
  • 2022
  • Yeh Fatima Sughra sa Ne Lyrics| Rizwan Zaidi 2022 – 1444

Yeh Fatima Sughra sa Ne Lyrics| Rizwan Zaidi 2022 – 1444

یہ فاطمہ صغرؑا نے لکھا بھائی کو رو رو کر، کیا تم کو خبر بھیا
تم سب کے بنا جو بھی گزرتی ہے یہاں مجھ پر،کیا تم کو خبر بھیا

ششماہے بنا چین میں پائوں تو بھلا کیسے
اُس کا وہ ہمکنا میں بُھلائوں تو بھلا کیسے
کتنا مجھے تڑپاتی ہے اب یادِ علی اصغرؑ، کیا تم کو خبر بھیا

کیوں مجھ کو یہ لگتا ہے کہ پیاسا ہے وہاں کوئ
اک بوند بھی پانی کو ترستا ہے وہاں کوئ
کب نظروں میں پِھر جاتا ہے سوکھا سا کوئ ساغر،کیا تم کو خبر بھیا

آنکھوں میں بسا رہتا ہے چہرہ وہ سکینہؑ کا
احوال کوئی اب تو بتا دے میری بہنا کا
غمگین یہ دل کتنا ہے جب پاس نہیں خواہر،کیا تم کو خبر بھیا

Leave a Reply

error: Content is protected By the Owner of Nohay Lyrics !!