Ads are placed to support costs of domain and hosting. All Ads are random and are not chosen by Nohay Lyrics: Sorry for any inappropriate ads.

Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar Lyrics | Syed Raza Abbas Zaidi 2023

Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar Lyrics In English

Haye Ali Akbar Haye Ali Akbar

Maqtal Ki Zameen Aur Qayamat Ka Woh Manzar
Thy Goud Mein Shabbir Ki Zakhmi Ali Akbar
Betay Ki Taraf Daikh Kay Jab Ya Ali Keh Kar
Ek Hath Rakha Seenay Pay Ek Hath Sinaan Par

Seenay Say Sinaan Khainch Ky Kehnay Lagay Sarwar
Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Kya Tum Say Kahun Kis Tarah Pahuncha Hun Sirhanay
Main Ghutniyon Chal Kar Tumhen Aaya Hun Uthanay
Aankhen Na Karo Band Meri Jaan Chalo Ghar

Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Takleef Hai Seenay Mein Yeh Ehsas Hai Hum Ko
Mehsoos Karo Tum Bhi To Is Bat Ky Ghum Ko
Mar Jaun Gi Yun Aerhian Ragrho Na Zameen Par
Kya Baap Sy Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Is Haal Mein Gar Samnay Beta Tera Hota
Zakhmon Ki Taraf Daikh Ky Kya Tu Nahi Rota
Do Hosla Seenay Say Laga Lo Mujhy Uth Kar
Kya Baap Se Is Tarha Juda Hotay Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Chehray Py Naqaab Is Liye Rehta Tha Tumharay
Allah Nazar Na Lagay Akbar Ko Hamaray
Phir Kis Ki Nazar Kha Gai Hum Shakal E Payambar
Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Kiun Baap Ki Aghosh Mein Dum Torh Rahay Ho
Ghurbat Mein Akela Hamen Tum Chorh Rahay Ho
Kiun Hichkian Letay Ho Meray Samnay Dillbar
Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Zaalim Ny Sinaan Mar Ky Jab Zeen Sy Giraya
Hathon Sy Jigar Tham Kay Tu Khak Py Aya
Chehray Py Teray Khoon Hai Zakhmi Hai Tera Sar
Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Kuch Dair Mein Lay Aye Ga Qaasid Khat E Sughra
Hum Say Na Parha Jaye Ga Tum Bhi Na Tarhapna
Jis Waqt Pukarun Ga Main Khat Seeny Py Rakh Kar
Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Akbar Nay Jab Aghosh Mein Li Akhri Hichki
Zeeshan O Raza Khaimay Say Zainab Ny Sada Di
Mar Jayen Gay Shabbir Teri Lash Utha Kar
Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar

Meri Jaan Akbar Tu Yaad Bahut Aye Ga
Mery Laal Akbar Ek Bar Pukaro Baba

Kiya Baap Se Is Tarha Juda Hoty Hain Akbar Lyrics In Urdu

مقتل کی زمیں اور قیامت کا وہ منظر
تھے گود میں شبیر کی زخمی علی اکبر
بیٹے کی طرف دیکھ کے جب یا علی ع کہ کر
اک ہاتھ رکھا سینے پہ اک ہاتھ سناں پر

سینے سے سناں کھینچ کے کہنے لگے سرورؑ
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

کیا تم سےکہوں کسطرح پہنچا ہوں سرہانے
میں گھٹنیوں چلکر تمہیں آیا ہوں اُٹھانے
آنکھیں نہ کرو بند میرے لعل چلو گھر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

تکلیف ہے سینے میں یہ احساس ہے ہمکو
محسوس کرو تم بھی تو اس باپ کے غم کو
مرجاؤنگا یوں ایڑیاں رگڑو نہ زمیں پر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

اس حال میں گر سامنے بیٹا ترا ہوتا
زخموں کیطرف دیکھ کے کیا تو نہیں روتا
دو حوصلہ سینے سے لگالوں مجھے اُٹھکر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

چہرے پہ نقاب اسلئے رہتا تھا تمہارے
اللہ نظر نا لگے اکبرؑ کو ہمارے
پھر کسکی نظر کھاگئی ہمشکل پیمبر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

کیوں باپ کی آغوش میں دم توڑ رہے ہو
غربت میں اکیلا ہمیں تم چھوڑ رہے ہو
کیوں ہچکیاں لیتے ہو مرے سامنے دلبر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

ظالم نے سناں مارکے جب زیں سے گرایا
ہاتھوں سے جگر تھام کے تو خاک پہ آیا
چہرے پہ ترے خون ہے زخمی ہے ترا سر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

کچھ دیر میں لے آئیگا قاصد خطِ صغراؑ
ہم سے نہ پڑھا جائیگا تم بھی نہ تڑپنا
جسوقت پکارونگا میں خط سینے پہ رکھکر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

اکبرؑ نے جب آغوش میں لی آخری ہچکی
ذیشان و رضا خیمے سے زینبؑ نے صدا دی
مرجائینگے شبیرؑ تری لاش اُٹھاکر
کیا باپ سے اسطرح جدا ہوتے ہیں اکبرؑ

Leave a Reply

error: Content is protected By the Owner of Nohay Lyrics !!
%d bloggers like this: