Ads are placed to support costs of domain and hosting. All Ads are random and are not chosen by Nohay Lyrics: Sorry for any inappropriate ads.

Shimr Khanjar Na Chala Urdu Lyrics |Mir Hassan Noha 2022-2023


آخری بار بہن چوملے بھائی کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

دور کر بات یہ کہتی رہی بنتِ زہراؑ

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے بھائی گلا

شمر خنجر نہ چلا

تیر جی بھر کے اسے مار چکا ہے لشکر

برچھیاں پہلو میں ٹوٹی ہے ستم اور نہ کر

خود ہی کچھ دیر میں ااجائے گی بھائی کو قضا

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے بھائی  کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

آخری مجھ سے ملاقات اسی کرنی ہے

ایسا لگتا ہے کوئی بات اسے کرنی ہے

اتنی حسرت سے مجھے دیکھ رہا بھیا

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے  بھائی کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

مننتیں کرتی ہوں ظالم تیری ایسا تو نہ کر

عصر کے وقت میرے گھر میں اندھیرا تو نہ کر

شام سے پہلے بجھاتا ہے چراغِ زہراؑ

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے بھائی  کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

یہ دل و جانِ رسول عربی ہے ظالم

ساتھ مظلوم کے یہ بے ادبی ہے ظالم

مثلِ قرآن ہے یہ زانوں تو سینے ہٹا

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے بھائی  کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

سن کے ہل من کی سدا رن مین آئی بچی

چل نہ جائے کہی دونوں پہ لعین  تیری چھری

دیکھ بھائی کے گلے پر ہے سکینہؑ کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے بھائی کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

کاٹ کر شام ہی لے جانے ہےسر  تجھ کو اگر

پھیر لے عون و محمد ؑ کے گلوں پر خنجر

میرے بھیا کے نہ کر جسم سے تو سر کو جدا

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے بھائی  کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

دیکھ سکتا نہیں تو جو نظر آتا ہے مجھے

واسطہ دیتی ہوں تطہیر کی ٓآیت تجھے

ہاتھ  اماں نے ہے شبیرؑ کی گردن پہ اماں نے رکھا

آخری بار بہن چوملے بھائی کا گلا

شمر خنجر نہ چلا

کاٹ کر سجدہ میں اکبر شائے ولا کا گلا

شمر ہستا ہوا شبیرؑ کے سینہ سے اٹھا

ارے گونجھتی رہ گئی  مقتل میں یہ زینبؑ کی صدا

شمر خنجر نہ چلا

آخری بار بہن چوملے بھائی کا  گلا

شمر خنجر نہ چلا

Leave a Reply

error: Content is protected By the Owner of Nohay Lyrics !!